• متفرقات >> حلال و حرام

    سوال نمبر: 39808

    عنوان: کاروبار

    سوال: میرا جنریٹر کا کارو بار ہے، جنریٹر کا پاور دو کیوی ہے مگر بازار میں سب جنریٹر پہ لکھا ہوا ہے، پانچ، تین کیوی ۔ میں گاہک کو دو کیوی بول کے بیچتاہوں، مگر گاہک آگے پانچ /تین کیوی بول کے بیچتاہے تو کیا میرے لیے یہ کاروبار حلال ہے؟ میں خود سچ بول کے بیچتاہوں مگر گاہک آگے جھوٹ بول کے بیچتاہے۔

    جواب نمبر: 39808

    بسم الله الرحمن الرحيم

    فتوی: 1463-1140/B=7/1433 جب آپ گاہکوں کو اپنے جنریٹرکا پاور دو کیوی کا صحیح بتاکر بیچتے ہیں تو آپ کے کاروبار کے حلال ہونے میں کوئی شبہ نہیں، آپ سے خریدنے کے بعد اگر دوسروں کو جھوٹ بولکر یعنی دو کیوی کے بجائے ۵کیوی کا بتاکر وہ بیچتا ہے تو جھوٹ بولنے کا یا دھوکہ دینے کا گناہ اسی جھوٹ بولنے والے پر ہوگا، آپ کی کمائی پر اس کا کوئی اثر نہیں آئے گا۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند