• متفرقات >> حلال و حرام

    سوال نمبر: 38942

    عنوان: كیا ہم تانترک کے پاس جا سکتے ہیں؟

    سوال: میرے گھر پہ گندا شیطانی عمل کرایا جا رہا ہے اور بہت پریشانی ہے ،بہت سے مولانا آئے اور کوشش کر کے ہار گئے اب انکا کہنا ہے کہ رحمانی علاج سے ٹھیک نہیں ہو پا رہا تو کیا صرف نجات پانے کے لئے ہملوگ شیطانی عمل کروا سکتے ہیں،صرف شفا حاصل کرنے کے لئے کیا کسی وجھ یا تانترک کے پاس جا سکتے ہیں؟

    جواب نمبر: 38942

    بسم الله الرحمن الرحيم

    فتوی: 996-821/B=6/1433 شیطانی عمل کروانا مسلمان کے لیے ناجائز ہے، لیکن اگر کسی حاسد اور دشمن نے شیطانی عمل کرکے آپ کو انتہائی پریشان کررکھا ہے۔ رحمانی علاج ہرممکن علاج کرلیا مگر کوئی فائدہ نہیں ہوا۔ آپ کی پریشانی بدستور باقی ہے تو شیطانی عمل کو برحق نہ سمجھتے ہوئے محض دفع ضرر اور حصول نجات کے لیے انتہائی مجبوری میں کر سکتے ہیں، مگر اس ناجائز کے عمل کو صحیح اور برحق نہ سمجھیں۔ نہ آپ کوئی مشرکانہ عمل کریں۔ان شرطوں کے ساتھ اجازت ہے۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند