• متفرقات >> حلال و حرام

    سوال نمبر: 38006

    عنوان: مرزائیوں کے ہوسپٹل سے ٹریٹمنٹ کروانا

    سوال: میرے ابّا جان دل کے مریض ہیں کافی عرصہ سے۔ بہت سے استپالوں میں ان کا علاج کرایا، لیکن ان کی طبیعت بہت زیادہ خراب ہے۔ تو کسی نے ان کو مشورہ دیا ہے کہ آپ جناب نگر (ربوہ) سے چیک اپ کروائیں تو آج وہ وہاں گئے ہیں۔ وہاں ڈاکٹر نے کہا ہے کہ آپ کو یہاں داخل ہونا پڑے گا۔ کیا ہمارا مذہب اس بات کی اجازت دیتا ہے؟ اگر اجازت ہے تو کہاں تک کیا وہاں داخل ہو کر ہم ان کا پکا ہوا کھانا کھا سکتے ہیں یا نہیں؟

    جواب نمبر: 38006

    بسم الله الرحمن الرحيم

    فتوی: 576-487/B=4/1433 ”ربوہ“ قادیانیوں کا گڑھ ہے وہ کافر ومرتد ہیں، مسلمانوں کو ان سے کسی طرح کا حتی کہ علاج معالجہ کا تعلق رکھنا بھی جائز نہیں۔ وہاں آپ کا قیام کرنا، ان کا پکا ہوا کھانا کھانا بھی جائز نہیں، ہمارے ہندوستان میں دل کا علاج کرنے والے ایک سے ایک اسپیشلسٹ ڈاکٹر موجود ہیں، آپ کو ہندوستان آکر دلی میں والد صاحب کا چیک اپ کرانا چاہیے تھا، آپ کو کس نے ایسی منحوس جگہ جانے کا مشورہ دیدیا، آپ ہندوستان آکر ان کا علاج کرائیں۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند