• متفرقات >> حلال و حرام

    سوال نمبر: 18511

    عنوان:

    حضرت یہ پوچھنا تھا کہ میں نے ایک شخص کو کچھ پیسے ادھار دئے تھے لیکن بعد میں مجھے احساس ہوا کہ اس شخص کی کمائی مشکوک ہے (مطلب کہ وہ شخص اپنی ملازمت میں گھپلے بھی کرتا ہے یعنی دو نمبری وغیرہ وغیرہ)․․․․․․تو جب وہ مجھے میرے پیسے واپس کرے تو میرے لیے ان کا استعمال جائز ہوگا یا پھر میں ان پیسوں کا کیا کروں؟ برائے مہربانی مشکل حل فرمائیں۔

    سوال:

    حضرت یہ پوچھنا تھا کہ میں نے ایک شخص کو کچھ پیسے ادھار دئے تھے لیکن بعد میں مجھے احساس ہوا کہ اس شخص کی کمائی مشکوک ہے (مطلب کہ وہ شخص اپنی ملازمت میں گھپلے بھی کرتا ہے یعنی دو نمبری وغیرہ وغیرہ)․․․․․․تو جب وہ مجھے میرے پیسے واپس کرے تو میرے لیے ان کا استعمال جائز ہوگا یا پھر میں ان پیسوں کا کیا کروں؟ برائے مہربانی مشکل حل فرمائیں۔

    جواب نمبر: 18511

    بسم الله الرحمن الرحيم

    فتوی(ب): 35=33-1/1431

     

    آپ اس کھود کُرید اور شک میں نہ پڑیں، جب آپ کو آپ کا قرض وہ شخص واپس کرے چپ چاپ لے لیں، اور اپنی جملہ ضروریات میں استعمال کریں۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند