• متفرقات >> حلال و حرام

    سوال نمبر: 18052

    عنوان:

    کیا لڑکی کی کمائی کی رقم کا استعمال والدین اوربھائی بہن کرسکتے ہیں جب کہ وہ پردہ نہ کرتی ہو اور کمانے کی کوئی سخت ضرورت بھی نہ ہو؟ (۲)کیا عورت کی کمائی کی رقم اس کا شوہر استعمال کرسکتا ہے جب کہ بنا کسی مجبوری کے کماتی ہو؟

    سوال:

    کیا لڑکی کی کمائی کی رقم کا استعمال والدین اوربھائی بہن کرسکتے ہیں جب کہ وہ پردہ نہ کرتی ہو اور کمانے کی کوئی سخت ضرورت بھی نہ ہو؟ (۲)کیا عورت کی کمائی کی رقم اس کا شوہر استعمال کرسکتا ہے جب کہ بنا کسی مجبوری کے کماتی ہو؟

    جواب نمبر: 18052

    بسم الله الرحمن الرحيم

    فتوی(ل):1972=1564-12/1430

     

    (۱) کمائی پر حرام ہونے کا حکم نہیں، والدین اور بھائی بہن اس رقم کو اس کی اجازت سے استعمال کرسکتے ہیں، البتہ لڑکی کا بغیر کسی ضرور ت کے بے پردہ ملازمت کرنا سخت گناہ کا کام ہے۔

    (۲) باجازت استعمال کرسکتا ہے، لیکن شوہر کااپنی بیوی سے روپے کمانے کے لیے باہر بھیجنا اور بیوی کا بے پردہ رہ کر ملازمت کرنا خلاف مروت اور ناجائز ہے۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند