• متفرقات >> حلال و حرام

    سوال نمبر: 178007

    عنوان:

    تعلیم بند ہونے کے بعد اجیر معلم کا فیس وصول کرنا؟

    سوال:

    کیافرماتے ہیں مفتیان کرام اس معاملے میں کہ، ہمارے محلے میں میں لڑکیوں کاایک ذاتی مدرسہ ہے جوکہ آج کل کے حالات یعنی لاک ڈاؤن کے مدنظر خودہی بندکردیاگیاہے مگرمدرسے کی جومعلمہ ہے وہ برابربچوں کے گھرسے فیس وصول کررہی ہے توکیایہ فیس لینااس معلمہ کے لیے جائزہے کیاجب کہ حالات کے چلتے سب ہی لڑکیوں کے والدین کی آمدنی بندہے ؟

    جواب نمبر: 178007

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa : 766-893/B=01/1442

     اگر معلمہ صاحبہ ماہانہ اجیر کی حیثیت سے تعلیم دیتی ہیں ، تو ان کے لئے تعلیم بند ہونے کے بعد تعلیم کی فیس وصول کرنا جائز نہیں ہے، جس طرح اسکول میں پڑھنے والے جو ٹیوشن پڑھتے ہیں، جب ان کی سالانہ چھٹی ہو جاتی ہے اور ٹیوشن پڑھنا بند کردیتے ہیں، تو چھٹی کے دنوں میں نہ کوئی فیس لیتا ہے اور نہ دیتا ہے۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند