• عبادات >> حج وعمرہ

    سوال نمبر: 27167

    عنوان: سوال عورت کے پردہ کے بارے میں ہے ۔ کیا طواف کے وقت اور حج کے ارکان کے وقت بھی عورت کو چہرہ چھپانا لازم ہے؟حدیث کی روشنی میں وضاحت فرمائیں۔ 

    سوال: سوال عورت کے پردہ کے بارے میں ہے ۔ کیا طواف کے وقت اور حج کے ارکان کے وقت بھی عورت کو چہرہ چھپانا لازم ہے؟حدیث کی روشنی میں وضاحت فرمائیں۔ 

    جواب نمبر: 27167

    بسم الله الرحمن الرحيم

    فتوی(م): 1632=1632-11/1431

    عورت کا احرام اس کے چہرے میں ہوتا ہے لہٰذا احرام کی حالت میں چہرے کو ڈھکنا تو جائز نہیں، لیکن اس کا یہ مطلب نہیں کہ احرام کی حالت میں عورت کو پردے کی چھوٹ ہوگئی، جہاں تک ممکن ہو پردہ ضروری ہے، اور نامحرموں سے چہرے کو چھپانا لازم ہے، اس کے لیے عورت کو چاہیے کہ سر پر کوئی چھجا سا لگالے اور اس کے اوپر کپڑا یا نقاب ڈال لے اس طور پر کہ وہ چہرے کو نہ لگے اور پردہ بھی ہوجائے۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند