• عقائد و ایمانیات >> حدیث و سنت

    سوال نمبر: 67303

    عنوان: فضائل اعمال میں ضعیف روایت مقبول ہوتی ہے

    سوال: میرے بہت سارے احباب کہتے ہیں کہ دعا ” اللہم لک صمت ․․․“جسے ہم روزہ کھولنے کے وقت پڑھتے ہیں (اور جس کا ذکر فضاء اعمال میں ہے)درست نہیں ہے،اور کہتے ہیں کہ یہ روایت ضعیف ہے۔براہ کرم، اس پر روشنی ڈالیں۔

    جواب نمبر: 67303

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa ID: 1004-983/H=10/1437

     

    آپ کے احباب نے شاید یہ قاعدہ بھی گھڑ رکھا ہوگا کہ جو روایت ضعیف ہوتی ہے وہ درست نہیں ہوتی اگر ایسا ہے تو ان احباب پر اپنی اور اپنی سمجھ کی اصلاح بھی واجب ہے یہ روایت اللہم لک صمت ․․․ مشکوة شریف ص: ۱۷۵میں بحوالہٴ ابوداوٴد شریف مرسلا موجود ہے اور مرسل روایت میں اگر چہ ضعف ہوتا ہے مگر وہ بہت ہلکے درجہ کا ضعف ہوتا ہے بالخصوص فضائل اعمال میں ایسی روایت مقبول ہوتی ہے۔ اس پر درست نہ ہونے کا حکم لگا دینا زیادتی یا فن حدیث شریف سے ناواقفیت ہے، اللہ پاک آپ کے ان احباب کو دین کی صحیح فہم عطاء فرمائے آمین۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند