• عقائد و ایمانیات >> حدیث و سنت

    سوال نمبر: 606942

    عنوان:

    حدیث کے صحیح یا ضعیف ہونے کا پتا کیسے لگے ؟

    سوال:

    جزی اللہ ہو عنا محمد ما ہوا اہل ہو ،حضرت محمد ﷺ نے ارشاد فرمایا کہ جو شخص یہ پڑھے گا تو اس کا ثواب ستر فرشتوں کو ایک ہزار دن تک نیکیاں لکھنے کی مشقت میں ڈال دے گا. رواحہ طبرانی، کذانی،الترغیب، سخاوی محترم یہ حدیث مجھے ایک دوست نے بھیجی ہے جس کے بارے میں آپ سے یہ پوچھنا تھا کہ یہ صحیح ہے یا نہیں؟

    جواب نمبر: 606942

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa:32-31/D-Mulhaqa=3/1443

     یہ حدیث متعدد کتابوں میں متعدد سندوں کے ساتھ مذکور ہے ؛ البتہ سند کے اعتبار سے ضعیف ہے ؛ لیکن فضائل میں ضعیف حدیث بھی معتبر ہے ،شیخ الحدیث حضرت مولانا محمد زکریا کاندھلوی  نے بھی فضائل درود میں اس کو ذکر کیا ہے ۔تفصیلی تخریج کے لیے دیکھیے : احادیث مشہورہ کی تحقیق از شیخ طلحہ بلال احمد منیار۔ حدیث کے الفاظ اور صحیح املا یہ ہے: جزَی اللہُ عنّا محمدًا ما ہو أَہْلُہ۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند