• عقائد و ایمانیات >> حدیث و سنت

    سوال نمبر: 605423

    عنوان:

    ایک حدیث کی تحقیق

    سوال:

    معزز مفتیانِ کرام! اکثر سوشل میڈیا پر حضرت علی رضی اللہ تعالیٰ عنہ کے فضائل میں ایک حدیث کا ذکر کیا جاتا ہے جس کی عبارت کچھ یوں ہے کہ "حضرت عائشہ صدیقہ رضی اللہ تعالیٰ عنہا فرماتی ہیں کہ اکثر حضرت ابو بکر صدیق رضی اللہ تعالیٰ عنہ حضرت علی رضی اللہ تعالیٰ عنہ کے چہرے کو دیکھتے رہتے تھے ۔ حضرت عائشہ رضی اللہ تعالیٰ عنہا کے استفسار پر حضرت ابو بکر صدیق رضی اللہ تعالیٰ عنہ نے کہا کہ اے میری بیٹی! میں نے نبی کریمﷺ کو فرماتے ہوئے سنا ہے کہ علی رضی اللہ تعالیٰ عنہ کے چہرے کو تکنا بھی عبادت ہے ۔" اس حدیث کی سند اور شرعی حیثیت کیا ہے ؟ برائے مہربانی حوالہ جات دے کر مشکور فرمائیں۔

    جواب نمبر: 605423

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa:833-702/N=12/1442

     متعدد کبار محدثین نے اس روایت کو موضوع وباطل قرار دیا ہے، جیسے: ابن الجوزی اور حافظ ذہبی وغیرہ (دیکھئے: موضوعات ابن الجوزی ، تلخیص مستدرک اور میزان الاعتدال وغیرہ)اور یہی رائے صحیح ہے اور یہ در اصل شیعوں کی گھڑی ہوئی ہے؛ لہٰذا وضع یا کم از کم ضعف شدید کی صراحت کے بغیر اس روایت کا بیان کرنا درست نہ ہوگا ۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند