• عقائد و ایمانیات >> حدیث و سنت

    سوال نمبر: 604880

    عنوان:

    رمضان كا پہلا عشرہ رحمت دوسرا مغفرت اور تیسرا نجات‏، كس حدیث سے ثابت ہے؟

    سوال:

    کیا فرماتے ہیں علمائے کرام اس حدیث کے بارے میں جو رمضان المبارک کے مہینے میں بتائی جاتی ہے کہ اس کا پہلا عشرہ رحمت دوسرا مغفرت تیسرا نجات کا کیا یہ حدیث صحیح ہے یا ضعیف؟ برائے کرام اس کا جواب دیں۔

    جواب نمبر: 604880

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa : 826-189T/D=10/1442

     حضرت سلمان فارسی رضی اللہ تعالی عنہ کی روایت سے ایک مفصل حدیث منقول ہے جو رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے شعبان کے آخری خطبہ جمعہ میں ارشاد فرمائی، اس روایت کا آخری جملہ یہ ہے: وہو شہر اولہ رحمة واوسطہ مغفرة وآخرہ عتق من النار ومن خفف عن مملوکہ فیہ غفر اللہ لہ واعتقہ من النار۔ یہ روایت مشکاة شریف میں بیہقی کی شعب الایمان کے حوالہ سے منقول ہے۔ کنز العمال میں ہے کہ ایک روای علی بن زید بن جدعان ضعیف ہیں بعض دیگر محدثین نے بھی اس روایت کو ضعیف قرار دیا ہے۔

    لیکن یہ ملحوظ رہے کہ کسی ایک راوی کے ضعیف ہونے کا مطلب یہ نہیں ہے کہ وہ یہ روایت ناقابل اعتبار ہے بالخصوص فضائل کے باب میں اس طرح کے ضعف کو نظر انداز کرنا محدثین کا متفقہ ضابطہ ہے۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند