• عقائد و ایمانیات >> حدیث و سنت

    سوال نمبر: 602902

    عنوان:

    قبرستان میں عورت کا جاسكتی ہے یا نہیں؟

    سوال:

    کیا ایک عورت قبرستان میں داخل ہو سکتی ہے اگر وہ اپنے والدین، خاوند یا اولاد کی قبر پر حاضری دینا چاہے ؟ اگر کوئی نرمی ہے تو کن شرائط کے ساتھ ہے ، قرآن و حدیث کی راشنی میں راہنمائی فرمائیں۔

    جواب نمبر: 602902

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa : 477-459/M=07/1442

     عورتیں بالعموم مردوں کی بہ نسبت کم ہمت اور کمزور دل ہوتی ہیں، وہ آہ و بکا اور نوحہ کرنے لگتی ہیں اور عقیدے کے بگاڑ میں بھی مبتلا ہوجاتی ہیں ان وجوہ سے عورتوں کو قبرستان جانے سے منع کیا گیا ہے، بوڑھی عورتیں اگر آہ و بکا کے بغیر، عبرت و ترحم اور صالحین کی قبروں سے تبرک حاصل کرنے کی غرض سے یا ایصال ثواب کی غرض سے جائیں تو گنجائش ہے لیکن فی زمانہ بوڑھی عورتوں کو بھی جانے سے بچنا احوط و اسلم ہے ایصال ثواب کے لیے قبروں پر حاضری ضروری نہیں، گھر بیٹھے ہی ایصال ثواب کرسکتی ہیں اور جوان عورتوں کو ہر صورت بچنا بہتر ہے۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند