• معاشرت >> ماکولات ومشروبات

    سوال نمبر: 59712

    عنوان: جن جانور ں کا شکار ہندوستان کے قانون کے حساب سے جرم ہے جیسے مور، ہرن ، خرگوش وغیرہ تو کیا شریعت میں ان کا شکار کرکے کھانا جائز ہے یا کیسا ہے؟

    سوال: جن جانور ں کا شکار ہندوستان کے قانون کے حساب سے جرم ہے جیسے مور، ہرن ، خرگوش وغیرہ تو کیا شریعت میں ان کا شکار کرکے کھانا جائز ہے یا کیسا ہے؟

    جواب نمبر: 59712

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa ID: 918-914/B=10/1436-U قانونی جرم کرکے اپنی جان کو اور عزت وآبرو کو خطرہ میں نہ ڈالنا چاہیے اور اپنے پیسوں کو ضائع نہ کرنا چاہیے، قرآن میں آیا ہے ”وَلَا تُلْقُوا بِأَیْدِیکُمْ إِلَی التَّہْلُکَةِ“ اگر کسی نے اتفاق سے قانونی جرم کرلیا یعنی ہرن کا شکار کرلیا اور شرعی طریقہ پر اسے ذبح کرلیا تو اس کا گوشت کھانا شرعاً حلال ہوگا۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند