• متفرقات >> دعاء و استغفار

    سوال نمبر: 606955

    عنوان:

    بار بار توبہ ٹوٹ جائے تو کیا کریں؟

    سوال:

    سوال : حضرت میں بار بار توبہ کرتا ہوں، لیکن بعد میں وہی گناہ ہو جاتا ہے میں کیا کروں ، توبہ پر استقامت نہیں رہتی ہے ۔ گناہ کرنے کے بعد اللہ کے عذاب سے ڈر بھی لگتا ہے ۔کوئی حل بتائیں۔

    جواب نمبر: 606955

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa : 55-28/B-Mulhaqa=03/1443

     ترمذی شریف کی روایت میں ہے کہ اللہ کے رسول صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا: ہر آدمی بہ کثرت خطا کرتا ہے پر بہترین خطا کرنے والا وہ آدمی ہے جو خوب توبہ کرنے والا ہو۔ کل ابن آدم خطّاء، وخیر الخطّائین التوابون (ترمذی، باب بلا ترجمة، رقم: 2499، أبواب صفة القیامة والرقائق والورع)؛ اس لئے آپ گناہ سے بچنے کی ہر ممکن کوشش کرتے رہیں، اس کے باوجود اگر کبھی سرزد ہوجائے تو فوراً دو رکعت نماز پڑھ کر اللہ تعالی کے حضور توبہ کرلیں اور ساتھ ساتھ ان امور سے دور رہیں جو گناہ کا ذریعہ بنتے ہوں نیز اگر ہوسکے تو قریب کے متبع سنت شیخ سے اصلاحی تعلق قائم کرلیں، انھیں اپنے احوال سے مطلع کرتے رہیں اور وہ جو ہدایات بتلائیں اس کے مطابق عمل کریں۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند