• متفرقات >> دعاء و استغفار

    سوال نمبر: 43844

    عنوان: تھوڑی ہمت سے كام لیں

    سوال: میں ایک طالب علم ہوں، الحمد للہ میں بہت نیک تھا .پانچ وقت کی نماز بھی پڑھتا تھا اور اپنی نظروں کی خوب حفاظت کرتا تھا مگر اچانک میں اتنی غفلت میں پڑگیا کہ اب میں انٹرنیٹ پر ننگی تصویروں دیکھنے میں مبتلا ہوگیا ہوں اور مشت زنی کی بیماری میں مبتلا ہوگیا ہوں ہر ۸ یا ۱۰ دن میں مجھ سے یہ گناہ ہوجاتا ہے بار بار اللہ سے رو رو کے معافی مانگتا ہوں مگر پھر شیطان مجھ سے یہ گناہ کروادیتا ہے .گناہ کرنے کے بعد ایسی ندامت ہوتی ہے کہ آنکھوں میں آنسو آجاتے ہیں..۸ /۱۰ دن کے بعد پھر عجیب شیطانیت سی آجاتی ہے پھر گناہ ہوجاتا ہے.. آپ براہ کرم، مجھے اس کا علاج بتائیں..میں آپ کا بہت احسان مند رہونگا ..اللہ آپ کو بہت اچھا رکھے اور آپ کا خاتمہ امان پر فرمائیں۔

    جواب نمبر: 43844

    بسم الله الرحمن الرحيم

    فتوی: 280-280/M=3/1434 تھوڑی سی ہمت کی ضرورت ہے، جب جب گناہ کا داعیہ پیدا ہو، مضبوطی سے اپنے نفس کو اس کے ارتکاب سے روکیں، اس وقت خدائی عذاب کا استحضار کرلیں، گناہوں کے دواعی سے خود کو دور رکھیں اپنے نفس کو سزادیں مثلاً جب گناہ ہوجائے تو سو رکعت نفل نماز اپنے اوپر لازم کرلیں، اسی طرح کچھ روزے لازم کرلیں، صدقہ خیرات لازم کرلیں وغیرہ ممکن ہو تو کسی قریبی شیخ ومرشد (متبع سنت صاحب نسبت بزرگ) سے اصلاحی تعلق قائم کرلیں اور ان کی ہدایات کے مطابق عمل کریں، اگر شادی نہ ہوئی ہو تو شادی کرلیں اور یہ جلد ممکن نہ ہو تو روزے کا اہتمام کریں۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند