• متفرقات >> دعاء و استغفار

    سوال نمبر: 162388

    عنوان: قرض كی ادائیگی كے لیے زكاۃ كی رقم لینا

    سوال: حضرت، میرا اَیکسیڈینٹ ہوا تھا دو سال پہلے، اَیکسیڈینٹ ایسا تھا کہ اس میں میرے ایک ہاتھ کی ہڈی الگ ہوگئی اور ایک آنکھ خراب ہوگئی اور جبڑا دانت وغیرہ ٹوٹ گیا، آج بھی کھانا صحیح سے نہیں کھایا جاتا، اور اس اَیکسیڈینٹ کی وجہ سے مجھے کمزوری بہت رہنے لگی، آج بھی کوئی کام کرنا بہت مشکل ہے، اور گرمی دھوپ سے اور زیادہ کمزوری آجاتی ہے کچھ کام نہیں ہوتا، جو ہاتھ ٹوٹا تھا اس سے اب بھی وزن اٹھایا نہیں جاتا۔ بات یہ ہے کہ میں کچھ کام نہیں کر پاتا، شادی ہوگئی ہے ایک بچہ بھی ہے۔ والد صاحب اسکول میں لیب اَٹینڈینٹ (لیب میں ملازمت کرنے والا) ہیں ، ۲۵/ سے ۳۰/ ہزار تنخواہ ہے ۔ میں کچھ چھوٹا موٹا کام کرکے سال بھر میں ۱۵/ سے ۱۶/ ہزار کما پایا ہوں، گھر سے بہت بار پیسے خرچے کے لئے مانگا ہوں، اب شرم آتی ہے۔ اَیکسیڈینٹ کے وقت گھر والے بھی اُدھار لئے تھے، ان پر بھی قرض ہے۔ اور میں بھی خرچے کے لئے اور پرانی اُدھاری بہت ہوگئی ہے تقریباً 75000 روپئے اِس میں سے 40000 ہے ، کیا کروں کچھ سمجھ میں نہیں آرہا ہے، اب ایسے حالات میں کیا مجھے زکات لینا جائز ہوگا یا نہیں؟

    جواب نمبر: 162388

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa : 1037-1143/B=12/1439

    قرض کی ادائیگی روزانہ صبح و شام ۱۰۰-۱۰۰/ مرتبہ یہ دعا پڑھتے رہیں اَللّٰھُمَّ اکْفِنِیْ بِحَلَالِکَ عَنْ حَرَامِکَ وَأغْنِنِی بِفَضْلِکَ عَمَّنْ سِوَاکَ ۔ ویسے صورت مذکورہ میں اگر آپ صاحب نصاب نہیں ہیں تو قرض کی ادائیگی کے لئے زکات کی رقم لے سکتے ہیں۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند