• معاشرت >> لباس و وضع قطع

    سوال نمبر: 9340

    عنوان:

    قرآن و حدیث میں ہر چیز موجود ہے، دل کہتا ہے کہ عطر لگانے کا طریقہ کیوں نہیں ہے۔ کیا تلاش کرنے سے نہیں ملے گا؟

    سوال:

    قرآن و حدیث میں ہر چیز موجود ہے، دل کہتا ہے کہ عطر لگانے کا طریقہ کیوں نہیں ہے۔ کیا تلاش کرنے سے نہیں ملے گا؟

    جواب نمبر: 9340

    بسم الله الرحمن الرحيم

    فتوی: 2485=2047/ ب

     

    جس طریقہ سے بھی عطر لگائیں گے، سنت اداء ہوجائے گی، ہم نے اپنے استاذ حضرت مولانا سید حسین احمد صاحب مدنی قدس سرہ اوراستاذ محترم شیخ الحدیث حضرت مولانا زکریا صاحب مہاجر مدنی نور اللہ مرقدہ کو دیکھا کہ عطر کو پہلے ہتھیلی میں لیا پھر دونوں ہاتھوں سے ہتھیلی کو ملا، پھر داہنی بغل میں پھر بائیں بغل میں لگاتے، اس کے بعد کندھے اور سینہ پر مل لیتے۔ یہ دونوں حضرات بہت متبع سنت بزرگ تھے۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند