• معاشرت >> لباس و وضع قطع

    سوال نمبر: 10336

    عنوان:

    سر ڈھانپنا نماز میں اور نماز کے بغیر کتنا ضروری ہے، نہ ڈھانپنے پر کیا گناہ ہے؟ اردو میں حدیث کے حوالہ سے بتائیں۔

    سوال:

    سر ڈھانپنا نماز میں اور نماز کے بغیر کتنا ضروری ہے، نہ ڈھانپنے پر کیا گناہ ہے؟ اردو میں حدیث کے حوالہ سے بتائیں۔

    جواب نمبر: 10336

    بسم الله الرحمن الرحيم

    فتوی: 377=253/ل

     

    وقت ضرورت ننگے سر ہونے میں کوئی مضائقہ نہیں، لیکن جو طریقہ آج کل رائج ہورہا ہے کہ ہروقت ننگے سر بالوں میں تیل ڈالے ہوئے پھرتے ہیں، یہ طریقہ اصالةً صلحاء اور اہل مروت کا نہیں، بلکہ خدا کے دشمنوں کا طریقہ ہے، اس سے اجتناب لازم ہے، حدیث شریف میں ہے: جو جس قوم کے ساتھ مشابہت اختیار کرے، وہ انھیں میں سے ہے۔ (ابوداوٴد) (فتاویٰ محمودیہ: ۱۹/۳۰۶)


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند