• معاملات >> بیع و تجارت

    سوال نمبر: 607881

    عنوان:

    امانت کی زکاۃ کس پر واجب ہوگی؟

    سوال:

    سوال : میری پرچون کی دکان ہے ، لوگ میرے پاس روپئے رکھتے ہیں ایسا رکھتے ہیں کہ تم اس پر کاروبار کریں کبھی بھی مجھے ضروت ہوگی پھر دیں گے ، اس دوران کچھ پر روپئے سال یا دوسال گزرگئے پھر لیں گے ، تو کیا ان روپیوں پر میں زکوٰة ہے ۔ دوسرا یہ مسئلہ کہ کچھ کوگ صرف روپئے دیتے ہیں کہ یہ رکھیں پھر لے لوں گا، اب وہ روپئے نوٹ تبدیل ہوگئے ، اور دوسرے نوٹ دیئے تو کیا یہ خیانت ہے ؟

    جواب نمبر: 607881

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa : 443-358/M=05/1443

     جو لوگ اپنے پیسے آپ کے پاس بطور امانت رکھتے ہیں ان پیسوں کی زکاة، حسب شرائط، رکھنے والوں کے ذمہ ہے، اور آپ وہ پیسے کاروبار میں اگر مالک کی اجازت سے لگاتے ہیں یا مالک کی اجازت سے نوٹ تبدیل کرتے ہیں تو گنجائش ہے یہ خیانت نہیں۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند