• معاملات >> بیع و تجارت

    سوال نمبر: 600088

    عنوان:

    پرانے برتنوں کی خرید وفروخت میں دھول مٹی کا وزن کم کرنے اور اس کے بہ قدر پیسے وضع کرنے کا حکم

    سوال:

    عام طور پر ہمارے علاقے میں جب پرانے برتنوں کی خرید وفروخت ہوتی ہے تو اس پرانے برتن میں لگی ہوئی دھول مٹی وغیرہ کا وزن کم کرکے پیسے دئے جاتے جیسے اگر کوئی پرانا برتن ایک کلوگرام ہے تو اس کا بازار میں ایک پیمانہ متعین ہے کہ اس میں سے ایک سو گرام کم کر دیتے ہیں جس پر بائع اور مشتری دونوں ہی کا اتفاق ہوتا ہے کیا اس طریقے سے تجارت درست ہے جواب مرحمت فرمائیں۔

    جواب نمبر: 600088

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa:53-33/N=2/1442

     صورت مسئولہ میں اگر برتنوں میں لگی ہوئی دھول مٹی کا صحیح وزن جاننے کا کوئی پیمانہ ہے اور اس پیمانہ سے دھول مٹی کا صحیح وزن جان کر برتن کے مابقیہ وزن کا پیسہ دیا، لیا جاتا ہے تو اس طریقہ تجارت میں شرعاً کچھ حرج نہیں۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند