• معاملات >> بیع و تجارت

    سوال نمبر: 56999

    عنوان: جن زیورات میں ہندوؤں كی خاص علامت ہو ان كا بیچنا كیسا ہے؟

    سوال: میں ایک تاجر آدمی ہوں۔ میرا ایک کارخانہ ہے ۔خردہ فروش تاجروں کے آڈر پر سونے چاندی کے زیو رات اپنے کاری گروں سے بنواتا ہوں۔ کارخانے کے کاری گروں میں مسلم بھی ہیں اور ہندو بھی۔ کبھی غیر مسلم تاجرایسے زیورات کا آڈردیتے ہیں جس میں ہندؤں کی خاص علامات زیور میں لگانے کی فرمائش ہو تی ہے ۔ جیسے بت یا اوم کی شکل۔ جو کمر اور گردن کے زیورات میں مہر (اسٹامپ) کی شکل میں لگائی جاتی ہے ۔جواب طلب مسئلہ یہ ہے کہ ایسے زیورات اپنے کارخانے سے ڈھلوانا جائز ہے ؟

    جواب نمبر: 56999

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa ID: 144-144/M=2/1436-U ایسے زیورات کا آرڈر بک کرنے سے معذرت کردیا کریں، جن میں ہندووٴں کی خاص علامات لگانے کی فرمائش ہوتی ہو، آپ اپنے کارخانے سے ایسے زیورات نہ ڈھلوایا کریں۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند