• معاشرت >> عورتوں کے مسائل

    سوال نمبر: 862

    عنوان:

    کیا عورتوں کے لیے جائز ہے کہ وہ عورتوں اور بچوں کے سامنے سر کھولے رہیں؟ نیز، کیا وہ ہاف آستین کا کپڑا پہن سکتی ہیں؟

    سوال:

    کیا عورتوں کے لیے جائز ہے کہ وہ عورتوں اور بچوں کے سامنے سر کھولے رہیں؟ (سر کا پردہ نہ کریں)

    نیز، کیا وہ ہاف آستین کا کپڑا پہن سکتی ہیں؟

    جواب نمبر: 86201-Sep-2020 : تاریخ اشاعت

    بسم الله الرحمن الرحيم

    (فتوى:  315/ل = 315/ل)

     

    مسلمان عورتوں، اسی طرح ایسے چھوٹے بچوں کے سامنے عورت سر کھول سکتی ہے، جو عورت کے پردے کی باتوں کے بارے میں واقف نہ ہوں اور نہ ہی انھیں شہوت کا کچھ پتہ ہو:

     

    اَوْ نِسَآئِهنَّ  اَوِ الطِّفْلِ الَّذِیْنَ لَمْ یَظْهَرُوْا عَلَی عَوْرَاتِ النِّسَآءِ (الآیة: ۳۱، سوة النور)

     

    عورت اپنے محارم کے سامنے ہاتھ اور بازو کھول سکتی ہے اس لیے ہاف آستین کا لباس بھی ان کے سامنے پہن سکتی ہے۔ (ومن محرمہ إلی الرأس والوجہ والصدر والساق والعضد إن أمن شهوتہ) وشهوتها أیضا (وإلا لا) ]الدر المختار مع الشامي. ط زکریا: 9/528) لیکن چونکہ عورت کے ہاتھ اور بازو ستر میں داخل ہیں، جن کا نماز میں چھپانا ضروری ہے اس لیے ایسا لباس پہننے سے احتراز ہی کرنا چاہیے۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند