India

سوال # 176495

کیا فرماتے ہیں علما ے دین اس مسئلہ میں کہ ایک چھوٹے شہر میں ایک قبرستان ہے ، قبرستان بہت بڑا ہے ، کیا اس قبرستان کے کسی کونے میں میت کو غسل دینے کے لئے غسل خانہ بنایا جاسکتا ہے ، جہاں غریب میتوں کی ، اسی طرح جن گھروں میں میت کو نہلانے کی سہولت نہیں ہے ، ان میتوں کی تجہیز و تکفین کی جاسکے ۔نیز قبرستان میں اگر غسل خانہ بنانا جائز ہو تو کیا وہاں مرحومہ عورتوں کی تجہیز و تکفین بھی درست ہوگی؟

Published on: Feb 6, 2020

جواب # 176495

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa : 544-498/M=06/1441



قبرستان اگر موقوفہ ہے تو اس میں میت کو نہلانے کے لئے مستقل غسل خانہ بنانا درست نہیں چاہے قبرستان بڑا ہو۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات