عبادات - صوم (روزہ )

United States of America

سوال # 7855

اگر کوئی شخص رمضان کے روزہ کی حالت میں اپنی بیوی کے ساتھ چوما چاٹی میں مشغول ہوجاتا ہے اس حد تک کہ وہ اپنی انگلی بیوی کی فرج میں داخل کردیتا ہے (لیکن آلہٴ تناسل داخل یا مس نہیں کرتا ہے) اس کے نتیجہ میں کچھ پتلی بہنے والی چیز مرد کے عضو سے باہر آتی ہے (منی کے علاوہ)۔ کیا میاں اور بیوی دونوں کا روزہ درست ہوگا؟ اگر نہیں، تو دونوں کا کفارہ کیا ہے؟ کیا تمام ساٹھ مسکینوں کو ایک ہی وقت میں کھلانا ضروری ہے یا مختلف اوقات میں ہم ان کو کھلا سکتے ہیں؟

Published on: Oct 25, 2008

جواب # 7855

بسم الله الرحمن الرحيم

فتوی: 2020/ب= 327/تب


 


صورتِ مذکورہ میں اگر منی نہیں نکلی ہے، صرف مذی نکلی ہے یا اپنی خشک انگلی بیوی کی شرمگاہ میں ڈالی ہے تو اس صورت میں دونوں کا روزہ صحیح رہا۔ کسی کے ذمہ قضا یا کفارہ واجب نہیں۔


واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات