عبادات - صوم (روزہ )

India

سوال # 150326

جمعہ کا دن چونکہ عید کا دن ہوتا ہے ،چند لوگوں کا کہنا ہے کہ نفل روزہ نہیں رکھ سکتے ؟ صحیح کیا ہے ؟ شکر یہ دعا کی درخواست ہے ۔

Published on: May 1, 2017

جواب # 150326

بسم الله الرحمن الرحيم



Fatwa: 905-892/M=8/1438



جو لوگ جمعہ کو عیدین پر قیاس کرکے جمعہ کے دن نفل روزہ رکھنے کو منع کرتے ہیں ان کا منع کرنا صحیح نہیں ہے، آدمی جمعہ کے دن بھی روزہ رکھ سکتا ہے، البتہ بہتر یہ ہے کہ صرف جمعہ کے دن کو روزہ کے لیے خاص نہ کرے؛ بلکہ آگے یا پیچھے ایک اور دن ملاکر روزہ رکھے، کیونکہ حدیث کے اندر تنہا جمعہ کو روزہ کے لیے خاص کرنے کی ممانعت آئی ہے: وعن أبي ہریرة -رضي اللہ عنہ- قال: قال رسول اللہ -صلی اللہ علیہ وسلم-: ”لا یصوم أحدکم یوم الجمعة إلا أن یصوم قبلہ أو بعدہ“ متفق علیہ (مشکاة المصابیح: ۱۷۹، باب صیام التطوع، ط: یار ندیم اینڈ کمپنی) قال أبویوسف: جاء حدیث في کراہیتہ إلا أن یصوم قبلہ أو بعدہ، فکان الاحتیاط أن یضمّ إلیہ یومًا آخر (شامي: ۳۳۶/۳، زکریا دیوبند)



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات