• عبادات >> صلاة (نماز)

    سوال نمبر: 14113

    عنوان:

     ایک مفتی صاحب نے فرمایا کہ جماعت کے ساتھ نماز پڑھنا واجب ہے اور مسجد میں نماز پڑھنا سنت ہے۔ اس لیے اگر ایک شخص کبھی کبھی گھر پر جماعت کے ساتھ نماز پڑھتا ہے او رمسجد نہیں جاتا ہے تو کوئی گناہ نہیں ہے ۔کیا یہ سچ ہے؟

    سوال:

     ایک مفتی صاحب نے فرمایا کہ جماعت کے ساتھ نماز پڑھنا واجب ہے اور مسجد میں نماز پڑھنا سنت ہے۔ اس لیے اگر ایک شخص کبھی کبھی گھر پر جماعت کے ساتھ نماز پڑھتا ہے او رمسجد نہیں جاتا ہے تو کوئی گناہ نہیں ہے ۔کیا یہ سچ ہے؟

    جواب نمبر: 1411301-Sep-2020 : تاریخ اشاعت

    بسم الله الرحمن الرحيم

    فتوی: 14421137/ھ

     

    بغیر کسی عذر کے مسجد کی جماعت کا ترک بھی گناہ اور ترک سنت کا موجب ہے اور کبھی کبھی کی صورت میں بھی یہی حکم ہے، حدیث شریف سے ایسا ہی ثابت ہے جن مفتی صاحب نے کہا کہ کوئی گناہ نہیں، ان سے ان کا قول لکھواکر بھیجئے تب تفصیل مزید ان شاء اللہ لکھ دی جائے گی۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند