• عبادات >> ذبیحہ وقربانی

    سوال نمبر: 154439

    عنوان: بھینس کی قربانی کا حکم کیا ہے؟

    سوال: بھینس کی قربانی کا حکم کیا ہے؟ اور کیوں کی جاتی ہے؟

    جواب نمبر: 15443901-Sep-2020 : تاریخ اشاعت

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa:1406-1324/sn=2/1439

    قرآن وحدیث کی روشنی میں تین طرح کے جانوروں کی قربانی شرعاً جائز ہے؛ بقر، غنم اور ابل، ”بقر“ کے اندر گائے؛ بیل اور بھینس سب داخل ہیں، چنانچہ معتبر کتب لغت میں یہ تصریح ہے کہ ”الجاموس“ نوع من البقر یعنی بھینس از قسم بقر ہے۔ (دیکھیں: تاج العروس اور المصباح المنیر وغیرہ)؛ اس لیے ”بھینس“ کی قربانی بلا شبہ جائز ہے اور اس کی وجہ وہ ہے جو اوپر لکھی گئی۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند