• معاملات >> حدود و قصاص

    سوال نمبر: 2121

    عنوان:

    یہ صحیح ہے کہ فطری مرتد کو اس دنیا میں قتل کردیاجائے گا لیکن میں یہ جاننا چاہتاہوں کہ اگر فطری مرتد (مرد) اخلاص سے توبہ کرلے تو کیا اللہ تعالی قیامت کے د ن اسے معاف کر یں گے؟ کیا اللہ تعالی صرف ملی مرتد کاتوبہ قبول کرتے ہیں ؟ کیا اللہ کے نزدیک فطری مرتد اور ملی مرتد کے توبہ کے درمیان کوئی فرق ہے؟ کیا قرآ ن اور حدیث میں اس کے بارے میں کوئی تذکرہ ہے؟

    سوال:

    یہ صحیح ہے کہ فطری مرتد کو اس دنیا میں قتل کردیاجائے گا لیکن میں یہ جاننا چاہتاہوں کہ اگر فطری مرتد (مرد) اخلاص سے توبہ کرلے تو کیا اللہ تعالی قیامت کے د ن اسے معاف کر یں گے؟ کیا اللہ تعالی صرف ملی مرتد کاتوبہ قبول کرتے ہیں ؟ کیا اللہ کے نزدیک فطری مرتد اور ملی مرتد کے توبہ کے درمیان کوئی فرق ہے؟ کیا قرآ ن اور حدیث میں اس کے بارے میں کوئی تذکرہ ہے؟

    جواب نمبر: 212101-Sep-2020 : تاریخ اشاعت

    بسم الله الرحمن الرحيم

    فتوی: 533/ ل= 533/ ل

     

    فطری مرتد اور ملی مرتد سے آپ کی کیا مراد ہے اس کی وضاحت کرکے دوبارہ استفتاء ارسال کریں۔ پھر ان شاء اللہ جواب دیا جائے گا۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند