• معاشرت >> نکاح

    سوال نمبر: 1504

    عنوان:

    براہ کرم ایک مسلم عورت کے نکاح کے بارے میں بتائیں،شادی سے پہلے ایک لڑکے سے اس کا معاشقہ چل رہاتھا، والدین کی عدم رضامندی پراپنے معشوق کے بجائے وہ کسی دوسرے لڑکے سے شادی کر لیتی ہے اوراپنے پہلے معشوق سے بھی جنسی تعلق جاری رکھتی ہے۔ نیزوہ اپنے شوہر سے حاملہ بھی ہے۔براہ کرم اس سلسلہ میں مدد فرمائیں۔

    سوال:

    براہ کرم ایک مسلم عورت کے نکاح کے بارے میں بتائیں،شادی سے پہلے ایک لڑکے سے اس کا معاشقہ چل رہاتھا، والدین کی عدم رضامندی پراپنے معشوق کے بجائے وہ کسی دوسرے لڑکے سے شادی کر لیتی ہے اوراپنے پہلے معشوق سے بھی جنسی تعلق جاری رکھتی ہے۔ نیزوہ اپنے شوہر سے حاملہ بھی ہے۔براہ کرم اس سلسلہ میں مدد فرمائیں۔

    جواب نمبر: 150401-Sep-2020 : تاریخ اشاعت

    بسم الله الرحمن الرحيم

    (فتوى: 923/ب = 862/ب)

     

    صورتِ مذکورہ میں اس عورت کا نکاح دوسرے لڑکے کے ساتھ جائز اور صحیح ہے۔ البتہ اپنے معشوق سے جنسی تعلق والے بالکل ختم کرلینا چاہیے اورہمیشہ کے لیے اس گناہ عظیم سے توبہ و استغفار کرنا چاہیے۔ قرآن میں ہے: وَلاَ تَقْرَبُوا الزِّنٰی اِنَّہ کَانَ فَاحِشَةً وَّ سَآءَ سَبِیْلاً


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند