• معاشرت >> ماکولات ومشروبات

    سوال نمبر: 1705

    عنوان:

    کیا کیکڑا ور جھینگا کھانا حلال ہے؟ براہ کرم ، قرآن کے حوالے سے جواب دیں۔ (۲) اگر الکوحل کو شوگر اسکریپ (گنے کے رس کا فضلہ) سے بنا یا جائے تو کیا اس الکوحل کو پر فیوم میں استعمال کرنا حلال ہے؟

    سوال:

    کیا کیکڑا ور جھینگا کھانا حلال ہے؟ براہ کرم ، قرآن کے حوالے سے جواب دیں۔ (۲) اگر الکوحل کو شوگر اسکریپ (گنے کے رس کا فضلہ) سے بنا یا جائے تو کیا اس الکوحل کو پر فیوم میں استعمال کرنا حلال ہے؟

    جواب نمبر: 170501-Sep-2020 : تاریخ اشاعت

    بسم الله الرحمن الرحيم

    فتوی: 619/ م= 614/ م

     

    (۱) دریائی جانوروں میں صرف مچھلی حلال ہے اور کیکڑا مچھلی میں داخل نہیں، لہٰذا کیکڑا حلال نہیں، در مختار میں ہے: فلا یجوز اتفاقًا کحیات وضبّ و ما في بحرٍ کسرطان إلا السمک۔ جھینگے کے بارے میں اختلاف ہے کہ وہ مچھلی ہے یا نہیں؟ جن حضرات کے نزدیک اس کا مچھلی ہونا محقق ہے وہ جائز کہتے ہیں۔ اور جن کے نزدیک مچھلی کی تعریف اس پر صادق نہیں آتی وہ اسے ناجائز کہتے ہیں، بہرحال یہ ایک اجتہادی مسئلہ ہے کسی جانب تشدد اختیار کرنا ٹھیک نہیں، اورجھینگا کھانے سے اجتناب کرنا زیادہ مناسب اور احوط ہے: جھینگے کی شرعی حیثیت کے عنوان سے ایک مفصل اور محقق مقالہ فقہی مقالات موٴلفہ حضرت مفتی تقی عثمانی صاحب میں موجود ہے اس کا مطالعہ فرمالیں۔

    (۲) گنے کے رس کے فضلہ سے بنایا گیا الکوحل، پرفیوم میں استعمال کیا جاسکتا ہے۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند