India

سوال # 174252

میں اور ایک لڑکی دونو ایک دوسرے سے شادی کرنا چاہتے ہیں، پر لڑکی کے ابا نے مسجد کے امام سے استخارہ کرایا جس میں بقول ان کے ہماری شادی نہ ہو، لہذا، اس بارے میں بتائِیں ہمارے لے استخارہ کون کون کر سکتا ہے اور کیا وہ استخارہ صحیح تھا؟جب کہ سوال آئی ڈی نمبر 47782 اور فتوی نمبر1350/L-459/TL=11/1434) کے مطابق تشو یش شدہ شخص ہی استخارہ کر سکتا ہ،اور امام میرے بارے میں کچھ نہیں جانتاہے۔ براہ کرم، جواب دیں۔

Published on: Nov 13, 2019

جواب # 174252

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:206-195/L=3/1441



استخارہ میں بہتر یہی ہے کہ خود مبتلی بہ شخص ہی استخارہ کرے ؛تاہم اگر کسی دوسرے دیندار شخص سے استخارہ کروایا جائے تو اس کی بھی گنجائش ہے ۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات