• Miscellaneous >> Halal & Haram

    Question ID: 57197Country: India

    Title: سوال یہ ہے کہ ہمارے شہر میں حکومت کی طرف سے گائے ذبیح پر پابندی ہے، لیکن ہمارے کچھ قصاب بھائی گائے ذبح کرنے سے باز نہیں آتے ہیں اور ایسے میں حالات بگڑنے کے خدشات رہتے ہیں تو شریعت میں کیا حکم ہے؟ ایسے معاملات میں قربانی جائز ہے یا نہیں؟ گوشت کھاسکتے ہیں یا نہیں؟

    Question: سوال یہ ہے کہ ہمارے شہر میں حکومت کی طرف سے گائے ذبیح پر پابندی ہے، لیکن ہمارے کچھ قصاب بھائی گائے ذبح کرنے سے باز نہیں آتے ہیں اور ایسے میں حالات بگڑنے کے خدشات رہتے ہیں تو شریعت میں کیا حکم ہے؟ ایسے معاملات میں قربانی جائز ہے یا نہیں؟ گوشت کھاسکتے ہیں یا نہیں؟

    Answer ID: 57197

    Bismillah hir-Rahman nir-Rahim !

    Fatwa ID: 242-234/N=3/1436-U (۱-۳) اگر گائے ذبح کرنے کی صورت میں اجتماعی یا انفرادی طور پر مسلمانوں کی جان ومال اورعزت وآبرو کو خطرہ لاحق ہو تو احتیاط چاہیے، اور یہی حکم قربانی کا بھی ہے، قرآن کریم میں ہے: ”وَلَا تُلْقُوا بِأَیْدِیکُمْ إِلَی التَّھْلُکَةِ “ (البقرة: ۱۹۵)، باقی گوشت کی حلت میں دونوں صورتوں میں کچھ شبہ نہیں؛ کیوں کہ چائے کا گوشت اللہ تعالیٰ نے حلال فرمایا ہے، ”وَمِنَ الْإِبِلِ اثْنَیْنِ وَمِنَ الْبَقَرِ اثْنَیْنِ“ (الانعام: ۱۴۴)

    Allah (Subhana Wa Ta'ala) knows Best

    Darul Ifta,

    Darul Uloom Deoband, India