عبادات - زکاة و صدقات

India

سوال # 165296

کیا فرماتے ہیں مفتیان اکرام اگر کوئی شخص یا عورت صاحب نصاب ہے لیکن اس کے پاس نقد روپیہ پیسہ نہ ہو تو وہ زکوٰة کیسے ادا کریں گے ؟

Published on: Oct 28, 2018

جواب # 165296

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:58-114/sd=2/1440



 جتنی زکات فرض ہے ، اسی کے بقدر سونا یا چاندی مستحقین کو دیدے یا اُس کو فروخت کرکے اُس کی قیمت دیدے ، اسی طرح اگر شوہر اُس کی اجازت سے اپنی رقم سے اُس کی زکات اداء کردے ، تب بھی زکات اداء ہوجائے گی، حاصل یہ ہے کہ عورت اگر صاحب نصاب ہے ، تو اُس کے ذمہ زکات کی ادائے گی واجب ہے ، نقدی نہ ہونے کی صورت میں مذکورہ بالا صورتوں میں سے کوئی بھی صورت اختیار کی جاسکتی ہے ۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات