عبادات - زکاة و صدقات

India

سوال # 162643

میں نے اپنے دوست کو 20000 روپئے اُدھار دیا ہے لیکن ابھی مجھے پیسے ملے نہیں، تو کیا مجھے اس رقم کی بھی زکات نکالنی ہوگی۔

Published on: Jul 7, 2018

جواب # 162643

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:1309-1083/L=10/1439



جی ہاں!اس قرض کی رقم پر بھی زکوة ہے ؛البتہ زکوة کی ادائیگی میں اختیار ہے خواہ شروع میں (حولانِ حول کے بعد)ہی زکوة دیدی جائے یا تاخیر سے ملنے کی صورت میں گذشتہ سالوں کی بھی زکوة یکبارگی ادا کردی جائے۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات