عبادات - زکاة و صدقات

India

سوال # 162543

جو پیسے ایک سال سے زیادہ رکھے ہوں ان کے اوپر زکات ہوتی ہے لیکن جو ہماری تنخواہ ہر مہینہ آتی ہے اس پر بھی زکات ہے؟

Published on: Jun 14, 2018

جواب # 162543

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa : 1298-1081/L=9/1439



جو رقم آپ کے پاس ایک سال یا اس سے زائد رکھی ہوئی ہے اور وہ بقدر نصاب ہے تو اس پر زکات واجب ہے جہاں تک ماہانہ تنخواہ پر زکات کا مسئلہ ہے تو تنخواہ کی رقم ملنے سے پہلے اس پر زکات کا حکم نہیں ہے البتہ رقم ملنے کے بعد جب نصاب پر سال پورا ہوگا اس کے ساتھ اس تنخواہ کی وصول شدہ رقم پر بھی زکات واجب ہوگی ۔ ومنہا حولان الحول علی المال العبرة فی الزکات للحول القمری کذا فی القنیة (ہندیة: ۱/۱۷۵، ط: سعیدیہ) ومن کان لہ نصاب فاستفاد فی أثناء الحول مالا من جنسہ ضمہ إلی مالہ وزکاہ (ہندیہ: ۱/۱۷۵) ۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات