عبادات - زکاة و صدقات

Pakistan

سوال # 162101

ہم چار بھائی ایک ہی اکاونٹ میں پیسے جمع کر تے ہیں کیا ایک سال کے بعد اس پوری رقم پر زیادہ ادا کرنی ہوگی؟

Published on: Jun 11, 2018

جواب # 162101

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:1031-875/N=9/1439



جی ہاں! اگر ہربھائی کی ملکیت کا پیسہ بہ قدر نصاب ہو، یا اس کے پاس دوسرے اکاوٴنٹ وغیرہ میں موجود پیسوں یا سونا، چاندی یا مال تجارت کے ساتھ مل کر بہ قدر نصاب ہو تو ہرصاحب نصاب پر زکاة واجب ہوگی، اکاوٴنٹ کے اشتراک کی وجہ سے زکاة کا حکم ختم نہ ہوگا۔



قولہ: ”وإن تعدد النصاب“: أي: بحیث یبلغ قبل الضم مال کل واحد بانفرادہ نصابًا فإنہ یجب حینئذ علی کل منہما زکاة نصابہ (رد المحتار، کتاب الزکاة، باب زکاة المال، ۳: ۲۳۶، ط: مکتبہ زکریا دیوبند)



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات