عبادات - زکاة و صدقات

Pakistan

سوال # 157749

محترم جناب، میں نے گندم کی فصل کاشت کی ہے ۔اس میں کھاد ، سپرے اور دیگر اخراجات اور مصنوعی پانی یعنی ٹیوب ویل سے پانی بھی لگایا۔ کچھ پانی نہر کا دیا۔ کچھ پانی بارش کی وجہ سے لگ گیا۔ مجھ پر اب جو عشر لاگو ہوگا اس کی شرح کیا ہو گی؟ دس فیصد یا بیس فیصد؟ اور یہ شرح حاصل کردہ مکمل گندم پر لاگو ہو گی یا اس میں سے اخراجات نکال کر ہوگی۔ مثلاً حاصل کردہ گندم 500 من ہوئی تو دسواں یا بیسواں حصہ 500 پر ہی لاگو ہو گا یا اس میں سے اخراجات نکال کر لاگو ہو گی۔

Published on: Jan 20, 2018

جواب # 157749

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:376-333/M=4/1439



عُشری زمین کی سیرابی اگر بارش کے پانی سے ہوئی ہے تو اس کی فصل میں عُشر (دسواں حصہ) واجب ہے اور اگر ٹیوب ویل، رہٹ وغیرہ کے ذریعہ سیرابی ہوئی ہے تو اس میں نصف عشر (بیسواں حصہ) واجب ہے اور اگر ٹیوب ویل اور بارش دونوں کے پانی سے ہوئی ہے تو اکثر کا اعتبار کرلیا جائے، عشر یا نصف عشر نکالنے میں اس کا خیال رکھا جائے کہ فصل پر کھاد وغیرہ کا جو کچھ خرچ آیا ہے اس کو وضع کرکے نہ نکالا جائے بلکہ خرچ وضع کیے بغیر جمیع پیداوار کا عشر یا نصف عشر نکالا جائے۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات