عقائد و ایمانیات - ادیان و مذاہب

India

سوال # 161188

ایک صاحب نے اپنی زمین کا ایک حصہ گروی رکھ کر بینک سے قرض لیا اب وہ ادائیگی قرض سے عاجز ہے ، لہٰذا وہ اپنی جگہ فروخت کرناچاہتا ہے اس طور پر کہ خریدار کو ۳لاکہ ۰۰۰۰۰ ۳زمین مالک کو دینا ہوگا اور بینک کا جو قرض زمین مالک کے ذمہ ہے وہ ادا کرنا ہوگا، کیا خریدی کی یہ صورت جائز ہے ؟ اگر جائز ہے تو اگر بینک کے قرض کی ادائیگی میں خریدار سے تاخیر ہو اور لون میں اضافہ ہو تو کیا خریدار گنہگار ہوگا؟

Published on: May 20, 2018

جواب # 161188

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:1094-988/L=9/1439



اگر بینک کے قرض کی مقدار متعین ہے اور خریدار کو قوی امید ہے کہ وہ ہرقسط کو اس کے وقت پر ادا کردے گا تو خریدار کے لیے زمین خریدنے کی گنجائش ہوگی۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات