India

سوال # 3962

میری بیوی نہانے کی وجہ سے اکثر سستی کرتی ہے اور اکثر ٹال دیتی ہے، مجھے اس پر بہت غصہ آتاہے، کیا اس کو گناہ ملے گا؟ کیا مجھے کسی اور کے ساتھ سیکس کرنا چاہئے؟ کتنے دن تک میاں اور بیوی کے سیکس نہ کرنے سے نکاح ٹوٹ جاتاہے؟

Published on: May 26, 2008

جواب # 3962

بسم الله الرحمن الرحيم

فتوی: 605/ د= 558/ د


 


نہانے کی وجہ سے عورت کا شوہر کے بلانے کے باوجود ہمبستری سے کترانا جائز نہیں ہے۔ یہ شوہر کا حق ہے، جس کی شوہر کی جانب سے خواہش ظاہر کرنے پر پورا کرنا عورت کے ذمہ ضروری ہے۔ قال في الشامي ولا تمنع نفسھا أي خوفًا من وجوب الغسل علیھا إذا وطئھا لأنہ حقہ (شامي: 113/1) اور بلاعذر انکار کرنے کی صورت میں گناہ بھی ہوگا۔ (۲) کسی اور سے ہمبستری کرنے کا کیا مطلب؟ حرام یا حلال؟ (۳) ہمبستری کرنے سے نکاح نہیں ٹوٹتا، البتہ قدرت و خواہش رکھتے ہوئے چار ماہ سے زیادہ دفعہ نہیں کرنا چاہیے اور حسب خواہش وقدرت وقفہ وقفہ سے جماع کرنا واجب ہے۔ قال في الشامي صرح أصحابنا بأن جماعھا أحیانا واجب دیانةً.... ویجب أن لا یبلغ بہ مدة الإیلاء. (شامي: 432/2)


واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات