India

سوال # 159861

حضرت، میں نے سنا تھا کہ چہرے کی خوبصورتی کے لیے چہرے کے اَنچاہے بالوں کو نکال سکتے ہیں لیکن کچھ دن پہلے مولانا سے سنا کہ آئی برو (بھوں) بنانے والی عورتوں پر آپ (صلی اللہ علیہ وسلم) نے لعن بھیجی ہے، تو کیا آئی برو چہرے کے بالوں میں نہیں شمار کئے جائیں گے؟

Published on: Apr 8, 2018

جواب # 159861

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:803-725/H=7/1439



ابرو (بھوٴں) کے بال جو فطری ہوتے ہیں اگر کسی عورت کے بال ان بالوں سے بہت زیادہ بڑھ گئے کہ بہت بھدی شکل ہوگئی تو بڑے ہوئے بالوں کو کاٹ کر فطری طور پر جتنے بال ہوتے ہیں اس مقدار میں کرلیے جائیں تو کچھ مضائقہ نہیں لیکن آج کل فیشنی انداز کی جو کٹنگ رائج ہوئی ہیں جو عامةً فیشن پرست عورتیں کراتی ہیں ایسے انداز پر کٹنگ کرنا کرانا گناہ اور موجب لعنت ہے اس سے اجتناب چاہیے۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات