Pakistan

سوال # 145993

کسی عورت کا پردے میں مرد ٹیلر کی دکان پر جاکر اپنا ناپ (پہلے سے سلا ہوا جوڑا ) دینا کیسا ہے ؟ کیا یہ عمل جائز ہے یا مکروہ ہے یا ناپسندیدہ ہے ؟نیز اگر کوء شخص اس عمل کو نا پسندیدہ سمجھتا ہے تو کیا یہ شخص جاہلانہ گِری ہوئی سوچ اور بیمار ذہنیت رکھتا ہے ؟

Published on: Jan 8, 2017

جواب # 145993

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa ID: 76-201/Sd=4/1438



 



عورت کا ضرورت کے وقت شرعی پردے کے ساتھ مرد ٹیلر کی دکان پر خود جاکر ناپ کے لیے اپنا سلا ہوا کپڑا دینا جائز ہے؛ البتہ عورت کا خود یا کسی عورت ٹیلر کے ذریعے اپنے کپڑے سلوانا زیادہ بہتر اور اُس کی حیاء کے مطابق ہے ۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات