Pakistan

سوال # 170648

بکر نے مسجد کے امور کے لیے پرنٹر لیا اور یہ نیت کی کہ گھر کا کام بھی کر لوں گا اور مسجد کا کام بھی کروں گا، اس سلسلے میں کچھ رقم مثلا اس کے پیپر وغیرہ، بجلی کا بل، اس کی دیکھ بھال اور مرمت اور اس پرنٹر کی سیاہی وغیرہ بکر نے اپنے ذمے لی،جبکہ کمپیوٹر بکر کا ذاتی ہے جس کے ساتھ اس پرنٹر کو لگانا ہے ۔ جبکہ مسجد کے لیے پرنٹر خریدنے کی رقم زید نے دی۔ اب سوال یہ ہے، کیا بکر گھریلو ضرورت کے لیے پرنٹر استعمال کر سکتا ہے؟

Published on: Jun 26, 2019

جواب # 170648

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa : 899-759/D=10/1440



مسجد کا پرنٹر اپنے ذاتی استعمال میں لانا جائز نہیں بکر جس طریقہ پر مسجد کا پرنٹر استعمال کر رہا ہے یا کرنا چاہ رہا ہے مثلاً پیپر بجلی کا بل مرمت پرنٹر کی سیاہی کمپیوٹر یہ سب کچھ بکر کا ہوگا جس سے بکر اپنا کام پورا کرے گا تو پھر مسجد کو پرنٹر استعمال ہونے کا بدل کیا ملے گا؟ پرنٹر کے متولی اور بکر کے درمیان کیا معاملہ طے ہوا۔



(۲) زید نے رقم جب پرنٹر خریدنے کے لئے دی تو اس کے ذہن میں کیا معاملہ تھا صرف پرنٹر مسجد میں کس طرح استعمال ہو سکے گا اور مسجد کو اس کی ضرورت ہے بھی کہ نہیں۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات