India

سوال # 165214

میں نے ایک زمین ایک مسلم بھائی سے خریدی تھی اور اس پر تعمیر بھی کرا لیا ہے۔ اب مجھے پتا چلا کہ وہ زمین سرکاری پیپر میں قبرستان کے نام درج ہے، کیا میں اس زمین پر دکان اور مکان بنا کر بیچ سکتا ہوں؟ اس زمین پر کوئی قبر نہیں ہے اور لوگوں نے مکان اور دکان بنا رکھے ہیں۔

Published on: Oct 23, 2018

جواب # 165214

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:41-105/L=2/1440



اگر واقعی وہ زمین قبرستان کی ہے تو چونکہ وقف کی بیع باطل ہے ؛اس میں بیع کا نفاذ نہیں ہوتا ؛اس لیے اس زمین پر دوکان یا مکان بناکر بیچنا درست نہیں،آپ اس بیع کو ختم کرکے رقم واپس لے لیں اور جو کچھ تعمیر کرا رکھا ہے اس کو منہدم کرکے ملبہ کو اپنے استعمال میں لائیں،یہ آپ سے غلطی ہوئی کہ آپ نے بلا تحقیق زمین خرید لی ،اور بائع پر ضروری ہے کہ اس زمین کو قبرستان کی کمیٹی کے حوالہ کردے ،اس کے لیے اس زمین کو فروخت کرنا جائز نہیں۔قال فی الہدایة: واذاصح الوقف لم یجز بیعہ ولا تملیکہ․(الہدایہ:۲/۶۴۰)



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات