Indian

سوال # 165131

میرا سوال یہ ہے کہ کوئی مدرسہ اگر اپنی ہی مسجد کو پیسہ وغیرہ اداھار دے تو لینا جائز ہے یا نہیں؟ مسجد کا چندہ الگ ہے ، حوالہ کے ساتھ جواب دیں۔

Published on: Oct 13, 2018

جواب # 165131

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa : 32-70/H=1/1440



جو لوگ مدرسہ میں رقم دیتے ہیں وہ مدرسہ کی ضروریات پر خرچ کرنے کی نیت سے دیتے ہیں اور اس میں بڑا حصہ زکات و دیگر صدقات واجبہ کا بھی ہوتا ہے کہ جن میں تملیک شرعی واجب ہوتی ہے معطیین کی منشاء کے بھی خلاف ہے اس لئے مدرسہ میں مدرسہ کے لئے جمع شدہ رقم کو مسجد کے لئے اُدھار دینا جائز نہیں، بالخصوص ایسی صورت میں کہ مسجد کے چندہ کا نظام مدرسہ سے الگ ہے۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات