عقائد و ایمانیات - قرآن کریم

Pakistan

سوال # 8208

ان دنوں مارکیٹ میں ایک سائنسی الیکٹراک جیبی سائز ڈیوائس قرآن جو کہ ڈیجیٹل قرآن کے نام سے جانا جاتا ہے دستیاب ہے اوربہت زیادہ مقبولیت حاصل کررہا ہے۔جس میں مختلف قراء حضرات کی آواز میں تلاوت موجود ہے اور متن بھی لکھا ہوا ہے اوربہت ساری اسلامی دینی معلومات بھی اس میں جمع ہیں۔ اس ضمن میں میرا پہلا سوال اس کی حرمت اور تعظیم کے بارے میں ہے؟ (۲) کیا یہ ڈیوائس بغیر وضو کے چھو سکتے ہیں؟ کیا یہ ڈیوائس کسی بھی جگہ رکھی جاسکتی ہے؟ نیزذہن میں پیدا ہونے والے تصور کو سمجھنے کے لیے اس ڈیوائس کی دوسری ہئیت کے بارے میں بھی بتائیں؟

Published on: Nov 9, 2008

جواب # 8208

بسم الله الرحمن الرحيم

فتوی: 1758=1656/د


 


جس وقت اسکرین پر قرآن باک کا نقش موجود ہو اسے بے وضو چھونا خلاف ادب ہے، جب اس میں قرآن پاک محفوظ ہے تو اسے بے ادبی کے مواقع اور بے حرمتی سے بچانا واجب ہے، جس کو معلوم ہے کہ اس میں قرآن محفوظ ہے اس کے لیے یہ حکم ہے۔


واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات