عقائد و ایمانیات - قرآن کریم

pakistan

سوال # 158579

ایک شخص قرآن حافظ ہے اور وہ قرآن بھول گیا ہے ۔ ساتھ ہی اس کو پیشاب کے بعد قطروں کا مرض اور پیشاب کی زیادتی کا مرض ہے ۔ ہر آدھے ایک گھنٹے کے بعد پیشاب آتا ہے ۔ اور پھر پندہ بیس منٹ قطرے آتے رہتے ہیں۔ جس کی وجہ سے زیادہ دیر تک وضو برقراز رکھنا مشکل ہے ۔ جبکہ قرآن یاد کرنے کے لیے ایک نشست میں زیادہ دیر تک بیٹھنا ضروری ہے ۔ تو کیا ایسا شخص بغیر وضو کے قرآن کو ہاتھ لگا سکتا ہے ؟ تاکہ ہر بار پیشاب سے فراغت کے بعد دوبارہ بیٹھ کر قرآن کو یاد کرسکے اس کے علاوہ پیشاب کے مرض سے نجات کے لیے کوئی دعا بھی بتا دیں۔

Published on: Feb 5, 2018

جواب # 158579

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa: 591-480/B=5/1439



حافظ صاحب کے بارے میں جو حالت آپ نے لکھی ہے وہ شرعاً معذور کے حکم میں نہیں ہیں، اس لیے ان کو قرآن بلاوضو چھونا درست نہیں، انھیں چاہیے کہ کسی رومال سے یا قلم سے قرآن کے اوراق پلٹیں اور اسے پکڑیں۔ حافظ صاحب کو چاہیے کہ پوری توجہ کے ساتھ اپنی اس بیماری کا علاج کرائیں۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات