متفرقات - تصوف

india

سوال # 161737

مفتی صاحب میرے سوال یہ ہے کہ آدمی کے ایمان کو مضبوط کرنے والی چیزیں کونسی ہے وہ کونسے اعمال ہیں جن سے آدمی کا ایمان مضبوط ہوتا ہے ایمان کو مضبوط کرنے کے لیے ہمیں کیا کرنا چاہیے تاکہ ہمارا ایمان مضبوط ہو سکے اور ایمان کو کمزور کرنے والے کون سے اعمال ہے جن سے ایمان کمزور ہو جاتا ہے ایمان کو مضبوطی کیلئے کوئی مخصوص عمل یا کوئی وظیفہ ہو تو بتائیں۔

Published on: May 30, 2018

جواب # 161737

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:1202-1019/L=9/1439



ایمان کو مضبوط کرنے کے لیے ،نمازوں کی پابندی،موت کی یاد ،قرآن کی تلاوت اور لاالہ اللہ کی کثرت کی جائے ،ایمانِ مجمل اور ایمانِ مفصل کے معانی کو سمجھ کر دل میں اس کے مضامین کو راسخ کیا جائے ،علماء وصلحاء کی مجالس میں حاضری دی جائے ان شاء اللہ ان اعمال سے ایمان کی کیفیت میں مضبوطی آئے گی،اس کے علاوہ اگر آدمی غافل ہوکر زندگی گذارے،نمازوغیرہ کی پابندی نہ کرے،قبروحشر اور موت کو یاد نہ رکھے ،دنیا ہی میں ہمہ وقت مشغول رہے ،غلط آدمیوں کی صحبت اختیار کرے ،موبائل اور دیگر لہو ولعب میں اپنے آپ کو مشغول رکھے وغیرہ تو یہ ایسے امور ہیں جن سے ایمان کمزور ہوتا چلا جاتا ہے ،مسلمان کو ان امور سے اپنے آپ کو بچانا ضروری ہے۔نماز وغیرہ کی پابندی کے ساتھ قرآن کی تلاوت کی کثرت اور موت کے یاد کی کثرت سے ایمان میں مضبوطی پیدا ہوتی۔ایک حدیث میں ہے کہ آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا کہ دلوں کو بھی زنگ لگ جاتا ہے جیساکہ لوہے کو پانی لگنے سے زنگ لگتاہے پوچھا گیا کہ حضور صلی اللہ علیہ وسلم ان کی صفائی کی کیا صورت ہے ؟آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا کہ موت کو اکثر یاد کرنا اور قرآن پاک کی تلاوت کرنا رواہ البیہقی فی شعب الایمان․



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات