متفرقات - تصوف

pakistan

سوال # 156637

کیا تصوف اور شریعت میں ایک غیر شادی شدہ لڑکی کے لیے یہ جائز ہے کہ وہ شیخ کے ناخن کاٹے یا شیخ کے پاوٴں دبائے، یا شیخ کے پاوٴں پر کریم لگائے، شیخ اگر کہے کہ اعمال کا دارو مدار نیتوں پر ہے․․․․ آپ ڈاکٹر ہیں اور میں مریض، کیا یہ جائز ہے؟

Published on: Dec 14, 2017

جواب # 156637

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:298-270/L=3/1439



کسی بھی مراہقہ یا بالغہ لڑکی خواہ وہ شادی شدہ ہو یا نہ ہو کے لیے شرعا یہ جائز نہیں کہ وہ شیخ کے ناخن کاٹے، یا شیخ کے پاؤں دبائے، یا شیخ کے پاؤں میں کریم لگائے، ایسے امور میں شیخ کی اطاعت جائز نہیں اگرچہ شیخ یہ کہے کہ اعمال کا دارومدار نیتوں پرہے۔ قال علیہ السلام: لاطاعة لمخلوق فی معصیة الخالق ”اللہ کی ناراضگی میں مخلوق کی اطاعت جائز نہیں“



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات