معاشرت - طلاق و خلع

Pakistan

سوال # 170143

میں سرکاری کلرک ہوں اور اس سلسلے میں لوگوں کی ریکارڈ بک ٹاٰئپ کرنا ہوتا ہے اس میں لکھنا ہوتا ہے کہ فلاں شخص طلاق یافتہ ہے یا شادی شدہ ہے اگر طلاق یافتہ ہو تو اس کا طلاق نامے کی نقل ٹائپ کر کے اس کو کمپیوٹر میں محفوظ کرنا ہوتا ہے اس کو ایک سے زائد دفعہ کاپی پیسٹ کرنا ہوتا ہے مثلا ایک آدمی نے طلاق نامے میں تحریر کیا کہ میں مسمی علی نواز اپنی بیوی فردوس کو اپنے حوش و حواس میں طلاق اول دیتا ہوں ایسی تحریر کرتے ہوئے وساوس آتے ہیں کیا ایسے الفاظ کو تحریر کرنے والے کلرک کی بیوی کو طلاق واقع ہوگی جس کا کام طلاق سے متعلقہ افراد کا ریکارڈ محفوظ کرنا ہو۔

Published on: May 21, 2019

جواب # 170143

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:960-857/L=9/1440



طلاق نامہ کی فائل پیسٹ کرتے وقت بیوی کا دل میں خیال آجانے سے بیوی پر کوئی طلاق واقع نہ ہوگی ،طلاق کے وقوع کے لیے بیوی کی طرف نسبت کرتے ہوئے زبان سے الفاظ ِ طلاق کا ادا کرنا ضروری ہے۔



لو أجری الطلاق علی قلبہ وحرک لسانہ من غیر تلفظ یسمع لا یقع (مراقی الفلاح شرح نور الإیضاح ص: 219)



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات