معاشرت - طلاق و خلع

Bihar

سوال # 169154

ایک آدمی نے اپنی بیوی کو غصہ کی حالت میں کہا کہ میں نے تجھے جواب دے دیا یہ جملہ اس نے چھ سات بار کہا۔ برائے مہربانی وضاحت فرما دیں کہ کونسی طلاق واقع ہوئی؟ اگر کوئی حوالہ نقل کر دیں تو عین نوازش ہوگی۔

Published on: Mar 31, 2019

جواب # 169154

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa:625-550/sn=7/1440



 امداد الاحکام(2/462 ، ط:کراچی) اورفتاوی محمودیہ( 12/578تا 580،ط: ڈابھیل) میں ”جواب دیا“ اسی طرح ”جواب ہے“کو طلاق کنائی شمار کیا ہے،اس کی رو سے تو صورت مسئولہ میں ایک طلاق بائن واقع ہوگی ؛ لیکن بعض علاقوں میں یہ لفظ صریح طلاق کے طور پر استعمال ہونے لگا ہے جیساکہ احسن الفتاوی(5/192،ط: کراچی) میں ہے اس کی رو سے صورت مسئولہ میں تین طلاق مغلظہ واقع ہوگئی، اب معلوم نہیں آپ کے علاقے میں عرف کیا ہے؟ بہتر ہے کہ آپ لوگ اپنے علاقے کے معتبر دارالافتا ء سے رجوع کریں اور وہاں سے جو حکم شرعی بتلایا جائے اس کے مطابق عمل درآمد کریں۔



واللہ تعالیٰ اعلم


دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند

اس موضوع سے متعلق دیگر سوالات